مہاراشٹر: ایم ایل سی الیکشن میں بی جے پی کو لگا بڑا جھٹکا، 6 میں سے صرف ایک سیٹ پر ملی جیت– Urdu News

سابق وزیر اعلیٰ دیویندر فڑنویس (Devendra Fadnavis) نے کہا، مہاراشٹر قانون ساز کونسل الیکشن کے نتائج ہماری امیدوں کے مطابق نہیں ہیں۔ ہم زیادہ سیٹوں کی امید کر رہے تھے جبکہ صرف ایک سیٹ پر جیت ملی ہے۔

مہاراشٹر: ایم ایل سی الیکشن میں بی جے پی کو لگا بڑا جھٹکا، 6 میں سے صرف ایک سیٹ پر ملی جیت

مہاراشٹر: ایم ایل سی الیکشن میں بی جے پی کو لگا بڑا جھٹکا، 6 میں سے صرف ایک سیٹ پر ملی جیت

ممبئی: مہاراشٹر لیجسلیٹیو کونسل الیکشن  (Maharashtra Legislative Council Elections) میں بی جے پی کو بری شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ ریاست کی 6 سیٹوں میں سے پارٹی کو صرف ایک سیٹ پر جیت ملی ہے۔ وہیں، شیو سینا – این سی پی (Shiv Sena-NCP) اور کانگریس (Congress) اتحاد نے 4 سیٹ پر جیت حاصل کی ہیں۔ خاص بات یہ ہے کہ ایم ایل سی انتخابات میں بی جے پی کے ہاتھوں سے اس کا گڑھ ناگپور بھی نکل گیا ہے۔ الیکشن میں شکست کا اعتراف کرتے ہوئے سابق وزیر اعلیٰ اور اپوزیشن لیڈر دیویندر فڑنویس (Devendra Fadnavis) نے کہا، ’مہاراشٹر قانون ساز کونسل الیکشن کے نتائج ہماری امیدوں کے مطابق نہیں ہیں۔ ہم زیادہ سیٹوں کی امید کر رہے تھے جبکہ صرف ایک سیٹ پر جیت ملی ہے۔ ہم سے تینوں پارٹیوں (مہا وکاس اگھاڑی) کی مشترکہ طاقت کو پرکھنے میں غلطی ہوئی۔

بی جے پی کے ہاتھ سے پھسلا ناگپور

بی جے پی کے لئے یہ بری شکست اس لئے بھی کہی جارہی ہے۔ کیونکہ وہ اپنے گڑھ ناگپور میں ہار گئی۔ ان الیکشن کو مہا وکاس اگھاڑی اور بی جے پی کے درمیان عزت کی لڑائی کے طور پر دیکھا جارہا تھا۔ سابقہ میں مرکزی وزیر نتن گڈکری اور سابق وزیر اعلیٰ دیویندر فڑنویس کے والد گنگا دھر راو فڑنویس اس سیٹ کی نمائندگی کرچکے ہیں۔ نتن گڈکری نے 1989 میں پہلی بار اس حلقے سے جیت حاصؒ کی تھی اور 2014 کا لوک سبھا الیکشن لڑنے سے پہلے چار بار جیت درج کی تھی۔

فڑنویس، چندرکانت پاٹل نے کی تھی انتخابی تشہیر

سابق وزیر اعلیٰ دیویندر فڑنویس سمیت مہاراشٹر بی جے پی کے صدر چندر کانت پاٹل سمیت بی جے پی لیڈروں نے پنے میں بھی انتخابی تشہیر کی تھی، جہاں مخالف اپوزیشن (مہا وکاس اگھاڑی) نے جیت درج کی۔


Source link

اس بارے میں admin

یہ بھی دیکھیں

کیا حکومتی اقدامات سے بھارتی کشمیر میں علیحدگی پسند جماعتیں جمود کا شکار ہو گئی ہیں؟ 

سرینگر —  بھارت کے زیرِ انتظام کشمیر میں حال ہی میں ہونے والے ضلعی ترقیاتی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *