پی ٹی سی ایل کی ایک اور ’2 نمبری‘ پکڑی گئی 

پی ٹی سی ایل کی ایک اور ’2 نمبری‘ پکڑی گئی 

لاہور (کامران اکرم) پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن کمپنی لمیٹڈ (پی ٹی سی ایل) نے گھٹیا انٹرنیٹ سروسز کی مد میں صارفین کو لوٹنے کے بعد اب دیگر طریقوں سے بھی لوٹنا شروع کر دیا ہے اور ’راﺅٹر‘ کے نام پر صارفین کی جیبیں خالی کی جانے لگی ہیں جس کے باعث صارفین خاصے پریشان ہیں۔ 

تفصیلات کے مطابق پی ٹی سی ایل کا انٹرنیٹ استعمال کرنے والے صارفین جس کرب اور اذیت میں مبتلا ہوتے ہیں اس بارے میں وہی جانتے ہیں لیکن کمپنی کی سروسز استعمال نہ کرنے والے صارفین بھی علم رکھتے ہیں کہ پی ٹی سی ایل کی سروسز پاکستان بھر میں انتہائی غیر معیاری ہیں اور صارفین سے ہر مہینے پیسے وصول کرنے کے باوجود کم رفتار انٹرنیٹ مہیا کی جاتی ہیں اور اکثر و بیشتر صارفین شکایات کرتے دکھائی دیتے ہیں۔ 

پی ٹی سی ایل غیر معیاری سروسز کے عوض پیسے بٹورنے میں تو اپنا کوئی ثانی نہیں رکھتی لیکن اب راﺅٹرز کے نام بھی لوٹ مار شروع کر دی گئی ہے اور کسی صارف کا راﺅٹر خراب ہونے پر نئے راﺅٹر کی مد میں 4000 روپے اور پرانے ماڈل کے راﺅٹر کی مد میں 2500 روپے وصول کئے جا رہے ہیں حالانکہ کمپنی کی جانب سے مہیا کئے جانے والے راﺅٹرز بھی انتہائی گھٹیا کوالٹی کے ہیں اور ان سے کہیں بہتر کوالٹی کے راﺅٹرز کم قیمت میں مارکیٹ سے دستیاب ہیں۔ 

اس حوالے سے جب ہیلپ لائن 1218 کے ذریعے کمپنی کے نمائندے سے رابطہ کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ ماضی میں بغیر کسی چارجز کے راﺅٹرز تبدیل کر دئیے جاتے تھے لیکن اب کمپنی نے اپنی پالیسی تبدیل کر دی ہے جس کے تحت راﺅٹر کی تبدیلی کے چارجز بھی صارفین کو ہی ادا کرنا ہوں گے اور مکمل قیمت ادا کرنے کے بعد بھی راﺅٹر کمپنی کی ملکیت ہی رہے گا جسے کنکشن بند کروانے کی صورت میں کمپنی کو واپس کرنا ہو گا اور جب ان سے یہ پوچھا گیا کہ آخر پوری قیمت ادا کرنے کے بعد بھی راﺅٹر کمپنی کی ملکیت کیوں رہے گا؟ تو وہ اس کا کوئی خاطر خواہ جواب دینے میں ناکام رہے اور صرف اتنا کہنے پر ہی اکتفا کیا کہ یہ کمپنی کی پالیسی ہے۔ 

دلچسپ بات یہ ہے کہ کمپنی کو راﺅٹر کی قیمت ادا کرنے کے بعد بھی اس کی ملکیت کمپنی کے پاس ہی رہتی ہیں اور صارفین یہ سوچنے پر مجبور ہیں کہ راﺅٹر کی پوری قیمت ادا کرنے کے بعد بھی وہ اس کی ملکیت کیوں نہیں۔ صارفین کا حکومت اور متعلقہ اداروں سے مطالبہ ہے کہ پی ٹی سی ایل کی بے لگام اور صارفین کو لوٹنے والی پالیسیوں کا نوٹس لیتے ہوئے لوٹ مار بند کرنے میں کردارادا کرے اور صارفین پر ڈالے گئے اس اضافی بوجھ کو ختم کرے جبکہ سروسز کو بھی انٹرنیشنل معیار کے مطابق بنایا جائے تاکہ ہر مہینے انٹرنیٹ کی مد میں ادا کئے جانے والے بل حقیقی معنوں میں حق ادا ہو سکے۔ 

پی ٹی سی ایل کی جانب سے صرف لوٹ کھسوٹ کا بازار ہی گرم نہیں بلکہ صارفین کو ذہنی اذیت میں مبتلا کرنے میں بھی اس کا کوئی ثانی نہیں جنہیں انٹرنیٹ سروسز کی شکایات کرنے پر کوئی لفٹ نہیں کروائی جاتی اور بغیر کوئی کام کئے شکایات بھی خودبخود ختم کر دی جاتی ہے جبکہ کمپنی کی جانب سے اعلیٰ حکام تک شکایات پہنچانے کی غرض سے مہیا کئے گئے ای میل ایڈریس care@ptcl.net.pk پر رابطہ کرنے پر بھی شنوائی نہیں ہوتی بلکہ ایک دو روز بعد جوابی ای میل میں مسئلہ حل کرنے کا جھوٹا دعویٰ کر دیا جاتا ہے۔ 

مزید :

قومیڈیلی بائیٹسسائنس اور ٹیکنالوجی




Source link

اس بارے میں admin

یہ بھی دیکھیں

ویو نے سمارٹ فونز کی دنیا میں انقلاب برپا کر دیا ، V20 سیریز کا نیا فون پاکستان میں متعارف کروانے کا اعلان 

ویو نے سمارٹ فونز کی دنیا میں انقلاب برپا کر دیا ، V20 سیریز کا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *