رام منوہر لوہیا اسپتال کے ڈاکٹر۔ نرس کورونا متاثرہ کے رابطے میں آئے ، قرنطینہ بھیجے گئے

بتا دیں کہ آر ایم ایل اسپتال سمیت قومی دارالحکومت کے کئی اسپتال میں کووڈ 19 سے متاثرہ مریضوں کا علاج کیا جا رہا ہے۔

رام منوہر لوہیا اسپتال کے ڈاکٹر۔ نرس کورونا متاثرہ کے رابطے میں آئے ، قرنطینہ بھیجے گئے

رام منوہر لوہیا اسپتال کے ڈاکٹر۔ نرس کورونا متاثرہ کے رابطے میں آئے ، قرنطینہ بھیجے گئے

نئی دہلی۔ کورونا وائرس کے انفیکشن کے خطرات سے عام لوگوں کے ساتھ ہی ڈاکٹر اور نرس بھی اچھوتے نہیں ہیں۔ دراصل ، دہلی کے رام منوہر لوہیا اسپتال (آر ایم ایل اسپتال) میں 6 ڈاکٹروں اور چار نرسوں کو  قرنطینہ (الگ تھلگ) میں رکھا گیا ہے۔ خبر رساں ایجنسی اے این آئی کے مطابق ، یہ سبھی کووڈ۔ 19 مثبت مریضوں کے رابطے میں آئے تھے۔ یہ جانکاری اسپتال کے جاری کردہ بیان میں بھی دی گئی ہے۔ بتا دیں کہ آر ایم ایل اسپتال سمیت قومی دارالحکومت کے کئی اسپتال میں کووڈ 19 سے متاثرہ مریضوں کا علاج کیا جا رہا ہے۔

کووڈ۔ 19 کے مشتبہ مریضوں کو دہلی کے اسپتالوں میں مسلسل بھرتی کیا جارہا ہے۔ 29 مارچ کو ایسے 34 افراد کو لوک نائک جئے پرکاش اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ معلومات کے مطابق ان 34 افراد کے ساتھ قریب 300 افراد رابطے میں آئے ہیں۔ ان سبھی لوگوں کو قرنطینہ میں رکھا گیا ہے۔ تمام مشتبہ مریضوں کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ وہ پچھلے کئی دنوں سے کسی مذہبی مقام پر مقیم تھے۔ ایل این جے پی اسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ اور ڈائریکٹر ، جے سی پاسی نے بتایا کہ کورونا کے 22 مریض پہلے ہی اسپتال میں زیر علاج ہیں ، جن میں سے 7 مریض کورونا کے مثبت ہیں۔ اس وقت اسپتال میں کورونا مریضوں کے لئے 58 آئیسولیشن بیڈ دستیاب ہیں۔ لہذا ، ابھی کچھ لوگوں کو جی بی پینت میں بھی منتقل کیا جائے گا۔

اس سے قبل 29 مارچ کو ہی ایک ساتھ 23 افراد کے کووڈ۔ 19 سے متاثر ہونے کی رپورٹ سامنے آئی تھی۔ اس طرح سے ملک کے دارالحکومت میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 72 ہوگئی ہے۔ اس کے علاوہ دہلی میں کورونا وائرس کے باعث دو افراد کی موت ہوگئی ہے۔ بتا دیں کہ کووڈ۔19  کے بڑھتے ہوئے انفیکشن کے پیش نظر پورے ملک میں لاک ڈاؤن کر دیا گیا ہے۔




Source link

اس بارے میں admin

یہ بھی دیکھیں

کیا حکومتی اقدامات سے بھارتی کشمیر میں علیحدگی پسند جماعتیں جمود کا شکار ہو گئی ہیں؟ 

سرینگر —  بھارت کے زیرِ انتظام کشمیر میں حال ہی میں ہونے والے ضلعی ترقیاتی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *