delhi assembly elections 2020 arvind kejriwal why election commission not releasing poll turnout figures several hours after polling– News18 Urdu

عام آدمی پارٹی کی کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ یہ یقینی طور پر حیران کن ہے ۔ الیکشن کمیشن کیا کر رہا ہے ۔ ووٹنگ کے کئی گھنٹوں بعد بھی الیکشن کمیشن ووٹنگ فیصد جاری نہیں کررہا ہے ۔

دہلی انتخابات : کیجریوال نے پوچھا : گھنٹوں بعد بھی ووٹنگ کا حتمی اعدادوشمار کیوں نہیں ہوا جاری ، الیکشن کمیشن نے دیا یہ جواب

اروند کیجریوال ۔ فائل فوٹو ۔

دہلی اسمبلی انتخابات (Delhi Assembly Election 2020) کیلئے ہفتہ کو ووٹنگ ہوچکی ہے ۔ اب 11 فروری کو نتائج آئیں گے ۔ نتائج سے پہلے عام آدمی پارٹی نے الیکشن کمیشن پر نشانہ سادھا ہے ۔ عام آدمی پارٹی نے سوال کرتے ہوئے کہا کہ ووٹنگ کے گھنٹوں بعد بھی الیکشن کمیشن نے ووٹنگ کا حتمی اعدادوشمار جاری کیوں نہیں کیا ۔ بتادیں کہ دہلی اسمبلی انتخابات میں ہفتہ کو شام چھ بجے تک 57.6 فیصد ووٹنگ درج کی گئی تھی ۔ وہیں رات 10.30 بجے تک 61.46 فیصد ووٹنگ ہوئی ۔ لیکن ایک حتمی ووٹنگ فیصد سامنے نہیں آئی ہے ۔

عام آدمی پارٹی کی کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ یہ یقینی طور پر حیران کن ہے ۔ الیکشن کمیشن کیا کر رہا ہے ۔ ووٹنگ کے کئی گھنٹوں بعد بھی الیکشن کمیشن ووٹنگ فیصد جاری نہیں کررہا ہے ۔


ادھر عام آدمی پارٹی کے لیڈر سنجے سنگھ نے کہا کہ کل دہلی کے الیکشن ختم ہوئے ۔ 70 سال کی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایسا ہوا ہوگا کہ الیکشن کمیشن یہ بتانے کیلئے تیار نہیں ہے کہ کتنی فیصد ووٹنگ ہوئی ، اس کا مطلب کہیں کچھ دال میں کالا ہے ۔ اندر ہی اندر کوئی کھیل چل رہا ہے ۔وہیں کیجریوال کے اس سوال کے بعد الیکشن کمیشن نے جواب دیا ۔ کمیشن نے کہا کہ ڈیٹا انٹری کا کام پورا ہونے کے بعد حتمی اعداد و شمار جاری کئے جائیں گے ۔ الیکشن کمیشن نے کہا کہ اتوار دیر شام تک ووٹنگ کے حتمی اعداد و شمار جاری کردئے جائیں گے ۔


Source link

اس بارے میں admin

یہ بھی دیکھیں

کیا حکومتی اقدامات سے بھارتی کشمیر میں علیحدگی پسند جماعتیں جمود کا شکار ہو گئی ہیں؟ 

سرینگر —  بھارت کے زیرِ انتظام کشمیر میں حال ہی میں ہونے والے ضلعی ترقیاتی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *