فائرنگ کے واقعات میں تین خواتین ہلاک، متعدد افراد زخمی

امریکہ میں فائرنگ کے دو مختلف واقعات میں تین خواتین ہلاک جب کہ دو سالہ بچے سمیت چھ افراد زخمی ہوئے ہیں۔

خبر رساں ادارے ‘ایسوسی ایٹڈ پریس’ کے مطابق ریاست کیلی فورنیا میں پیر کو ایک شخص نے مسافروں سے بھری ایک بس میں دورانِ سفر فائرنگ کر دی جس میں ایک خاتون ہلاک اور پانچ افراد زخمی ہو گئے۔

حکام اور عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ اس اچانک حملے کے بعد مسافروں نے حملہ آور کو قابو میں کر لیا جسے بعد ازاں گرفتار کر لیا گیا۔

کیلی فورنیا کے ہائی وے پیٹرولنگ سارجنٹ برائن پیننگز نے کہا ہے کہ لاس اینجلس سے سان فرانسسکو جانے والی بس میں فائرنگ کے بعد ڈرائیور نے حملہ آور کو اپنی طرف کھینچا اور مسافروں نے اسے پکڑ کر بس سے نیچے اتار دیا جس کے بعد حملہ آور کو گرفتار کر لیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد بھی مسافروں نے ہی دی۔

حکام کے مطابق انتھونی ولیمز نامی حملہ آور کی عمر 33 برس ہے اور وہ امریکہ کی ریاست میری لینڈ سے تعلق رکھتا ہے۔ اسے قتل اور اقدامِ قتل کے الزامات میں گرفتار کیا گیا ہے۔

برائن پیننگز کے مطابق حملہ آور سے تفتیش جاری ہے لیکن لوگوں کو نشانہ بنانے کا مقصد ابھی معلوم نہیں ہو سکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ شواہد نہیں ملے کہ حملہ آور کی کسی مسافر سے کوئی شناسائی یا واقفیت تھی۔

حکام کے مطابق حملہ آور سے بندوق کے علاوہ متعدد میگزین بھی قبضے میں لیے گئے ہیں۔ ملزم کے پاس نیم خودکار بندوق تھی جس سے اس نے بس میں سوار افراد پر فائرنگ کی۔ بس میں سوار 43 مسافروں میں خواتین اور بچے بھی موجود تھے۔

حملے میں کولمبیا سے تعلق رکھنے والی 51 سالہ خاتون ہلاک ہوئی ہیں جب کہ ایک 45 سالہ شخص اور 19 سالہ خاتون شدید زخمی حالت میں زیرِ علاج ہیں۔ دو خواتین اور ایک مرد معمولی زخمی ہوئے ہیں۔

دوسری جانب پیر کو ہی امریکی ریاست ٹیکساس کی ایک یونیورسٹی میں بھی فائرنگ کا واقعہ پیش آیا ہے جس میں دو خواتین ہلاک ہو گئی ہیں جب کہ ایک بچہ زخمی ہوا ہے۔ حکام نے حملہ آور کی شناخت ظاہر نہیں کی ہے۔

یونیورسٹی پولیس کے سربراہ برائن وان نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ انہیں یونیورسٹی میں فائرنگ کی اطلاع مقامی وقت کے مطابق 10 بج کر 17 منٹ پر ملی اور ان کے افسران نے بروقت کارروائی کی۔

پولیس پہنچی تو دو خواتین یونیورسٹی کی ایک رہائشی عمارت کے کمرے میں مردہ حالت میں پائی گئیں جب کہ ان کے ہمراہ ایک دو سالہ بچہ بھی زخمی حالت میں ملا۔ بچے کو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جہاں اس کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

برائن وان نے پریس کانفرنس کے بعد سوالات کے جوابات سے گریز کیا اور یہ نہیں بتایا کہ ہلاک ہونے والی خواتین یونیورسٹی کی طالبہ تھیں یا نہیں۔

یونیورسٹی نے واقعے کے بعد تدریسی عمل جمعرات تک کے لیے معطل کر دیا ہے۔


خبر کا حوالہ

اس بارے میں admin

یہ بھی دیکھیں

کیا پاکستان ٹیم میں محمد عامر کی جگہ بنتی تھی؟

کراچی —  بھارتی بلے باز ویراٹ کوہلی کے مطابق انہوں نے اپنے کریئر میں محمد …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *